بچوں میں کھانسی کے فوری علاج کے کچھ آزمودہ گھریلو نسخے۔ ماؤں کے لئے بڑا تحفہ

بچوں میں کھانسی کے فوری علاج کے کچھ آزمودہ گھریلو نسخے۔ ماؤں کے لئے بڑا تحفہ:

آج ہم آپ سے بات کریں گے کہ کیسے آپ بچوں میں کھانسی کو دور کر سکتے ہیں۔ بچوں میں کھانسی کی شکایت عام ہے۔ اکژ بچوں میں بدلتے موسم میں کھانسی شروع ہو جاتی ہے تو ایسے کونسے گھریلو نسخے ہیں جس کی مدد سے آپ کے بچے میں کھانسی کی شکایات کم ہو سکتی ہیں۔ اور اگر گھریلو نسخے کام نہ آئیں تو کب آپ کو ڈاکٹر کے پاس جانا چاہیے۔

سب سے پہلے ہم بات کریں گے کہ کھانسی ہوتی کیوں ہے، بچوں میں کھانسی عموماً کسی وائرس کی وجہ سے ہوتی ہے یا ہوا میں جو فلو پھیلا ہوا ہے اس کی وجہ سے بھی بچوں میں کھانسی ہو جاتی ہے۔ یا بچوں نے کسی ایسے بندے سے کنٹکٹ کیا جسے کھانسی ہوئی ہوئی ہے تو بچے اس کنٹکٹ کی وجہ سے کھانسی کا شکار ہو جاتے ہیں۔ یا بچوں کو الرجی ہے ہوا میں پھیلی مٹی اور سموک سے۔ بہت کم بچوں میں دیکھا گیا کہ کھانسی کسی بڑی وجہ سے ہو جیسے دمہ، نمونیہ، برونکیٹس (Bronchitis)وغیرہ۔

ہم آج آپ سے اس بارے میں اس لیئے بات کررہے ہیں کیونکہ ہم اکثر بچوں کو گھریلو ٹوٹکوں اور دوائیوں سے کھانسی ٹھیک تو کر لیتے ہیں لیکن ہم بچوں میں جس وجہ سے کھانسی ہو رہی ہے وہ دور نہیں کرتے۔ ایسی صورت میں آپ کے بچے کی کھانسی تو ٹھیک ہو جائے گی لیکن وہ وجہ وہیں رہ جائے گی اور بچے میں بار بار کھانسی کی شکایت ہوگی۔

اگر آپ کے بچے کو ٹھنڈ کی وجہ سے کھانسی ہے تو آپ دیکھیں کہ اس کی ٹھنڈ بھی ساتھ ساتھ ٹھیک ہو۔ اگر آپ کے بچے کو فلو کی وجہ سے کھانسی ہے تو یہ دیکھیں کہ آپ کے بچے کا پورے کا پورا فلو اس کے جسم سے نکل جائے۔ اگر آپ کے بچے کو مٹی سے کھانسی ہے تو اس بات کا خیال رکھیں کہ اس کے اردگرد مٹی نہ ہو تو بنیادی طور پر آپ کو سب سے پہلے کھانسی کی جڑ کو ختم کرنا ہے۔

کھانسی ہمارے لیے ایک اچھی بات بھی ہے کہ یہ ہمارے جسم کا قدرتی نظام ہے کسی بھی ایسے جَرم یا وائرس کو نکالنے کے لیے جو ہماری سانس کی نالی میں اٹکا ہوا ہے۔ بہت ہی چھوٹے بچے جو بلغم ناک کے ذریعے نہیں نکال سکتے ان کے لیے بہت اچھا ہے کہ وہ کھانسی کر رہے ہیں۔ کیونکہ کھانسی کرنے سے یا تو الٹی کی شکل میں باہر آ جائے گا۔ اس طرح آپ کے بچے میں جو انفیکشن ہے وہ پورا کا پورا باہر آ جاے گا۔ ہاں اگر آپ کے بچے میں کھانسی کے ساتھ بخار ہے تو آپ کو اپنے بچے کو ڈاکٹر کے پاس لے کے جانا چاہیے۔ اگر آپ کے بچے کو 7دن تک کھانسی ٹھیک نہیں ہوئی تو آپ کو ڈاکٹر کے پاس چیک کروانا چاہیے۔

چلیں اب ہم بات کرتے ہیں اس گھریلو ٹوٹکوں کے بارے میں جو کسی بھی ماں کے لیے نہایت مددگار ثابت ہوں گے اور بچے کو بھی جلد آرام ملے گا۔
(1) بچے کو زیادہ سے زیادہ پانی والی غذا دیں اس سے کیا ہوگا کہ بچے کا گلا کھانسی میں سوکھ رہا ہوتا ہے تو بچے کے گلے کو کافی نمی ملے گی اور بچا بھی پرسکون رہے گا۔ کھانسی کے دوران اکثر بچے کھانا بھی نہیں کھا رہے ہوتے تو آپ اپنے بچوں کہ ہلدی والا دودھ دے سکتے ہو اگر آپ کا بچہ6ماہ سے اوپر ہے۔ آپ اس کو چکن سوپ دیں۔
(2) بچے کو دن میں 2سے 3بار بھاپ دیں۔ اس طرح بچے کا ناک بھی کھلتا ہے اور گلے کو بھی نمی ملتی ہے۔
(3) دیسی گھی کو تھوڑا سا گرم کر کے بچے کے گلے پر مساج کریں۔
(4) سرسوں کے تیل میں تھوڑا سا لہسن اور تھوڑی سی اجوائن ملا کے گلے، ناک اور سر کی مالش کریں۔ اس سے بھی آپ کے بچے کو کافی حد تک آرام ملے گا۔ یہ تیل آپ بچے کے پورے جسم پر بھی لگا کے مالش کر سکتے ہیں اور پھر اپنے بچے کہ ڈھانپ لیں اور یہ خیال رکھیں کہ آپکا بچہ ڈائرکٹ پنکھے یا ہوا میں نہ جائے۔
(5) تلسی کے پتے لا کے اس کا جوس نکال لیں تھوڑا سا ادرک لے کے اس کا جوس نکال کے شہد میں ملا کے بچے کو دیں۔
(6) بچے کو تکیہ دے کے سلا دیا جائے تاکہ اس کی ناک میں بلغم جمے نہ بلکہ بہہ جائے۔ اس سے بچے کے گلے میں بھی بلغم نہیں جمے گا اور بچے میں کھانسی کو بھی کافی آرام آئے گا۔
(7) ہوا میں تھوڑی نمی لانی ہے کیونکہ بچہ سانس کے ذریعے ہوا اپنے اندر لے کر جائے گا۔ اس کے لیے آپ اپنے گھر کی کھڑکیاں کھول دیں۔ یہ ایسی صورت میں آپ کریں جب آپ کے بچے کو خشک کھانسی ہو۔ بچے کا ماحول بدلنے سے بھی بہت فرق پڑے گا۔
(8) بچے کو تھوڑا سا گڑ چٹا دو اس سے بھی بچے کو کافی فرق پڑے گا۔
(9) بچے کو کھچڑی دو کیونکہ اس وقت بچے اکثر کھانا نہیں کھاتے ان کو کھانے سے تکلیف ہو رہی ہوتی ہے تو کھچڑی پتلی پتلی بنا کے اس کو کھلاؤ۔
(10) بھنڈی کا سوپ بنائیں، بھنڈی کا سوپ آپ 8ماہ سے زیادہ کے بچے کو دے سکتے ہیں۔ اس سے بھی آپ کے بچے کو کافی آرام ملے گا۔

Spread the love
کیٹاگری میں : صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں