جب آپ ہر روز دلیا کھاتے ہیں تو آپ کے جسم کو کیا ہوتا ہے۔

آپ نے شاید پہلے سنا ہو گا کہ جئی صحت مند ترین اناجوں میں سے ایک ہے جسے آپ کھا سکتے ہیں لیکن کیا یہ حقیقت میں سچ ہے اگر ایسا ہے تو مطالعے کے مطابق ہر روز جئی کھانے کے کیا فوائد ہیں، آئیے اس ویڈیو میں جانیں گے کہ ہم کچھ ثابت شدہ صحت کے بارے میں جانیں گے۔

پہلے نمبر پر ۔
یہ قبض سے نجات دلاتا ہے قبض ایک عام ہاضمہ مسئلہ ہے جو بہت سے لوگوں کو متاثر کرتا ہے خاص طور پر وہ لوگ جو نہیں کھاتے۔ کافی فائبر جئی ایک خاص قسم کے گھلنشیل فائبر سے بھرپور ہوتے ہیں جسے بیٹا بلوکن کہتے ہیں جو آنتوں میں جیل کی طرح کا مادہ بناتا ہے اور چیزوں کو حرکت دینے میں مدد کرتا ہے 2014 میں کی گئی ایک تحقیق میں بتایا گیا کہ 12 ہفتوں تک جئی کی چوکر کھانے سے تعدد اور مستقل مزاجی میں بہتری آتی ہے۔

نمبر دو پر۔
اس کے استعمال سے آپ کو وزن کم کرنے میں مدد ملتی ہے جئی آپ کی وزن کم کرنے والی غذا میں ایک بہت بڑا اضافہ ہے ان میں کیلوریز کم ہیں لیکن فائبر اور پروٹین زیادہ ہے جو آپ کو طویل عرصے تک پیٹ بھرنے اور پیٹ بھرنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔ مطالعے کے مطابق آپ کی بھوک کو کم کریں بیٹا بلوکینن اوٹس ہارمونز کی پیداوار کو بھی بڑھا سکتے ہیں جو سیر ہونے کا اشارہ دیتے ہیں جیسے پیپٹائڈ YY گلوکاگن نما پیپٹائڈ ون اور cholecystokinin ایک مطالعہ جس میں 47 زیادہ وزن والے اور موٹے بالغ افراد پر مشتمل ایک مطالعہ پایا گیا کہ ناشتے میں دلیا کھانے سےزیادہ پیٹ بھرتا ہے ۔

نمبر تین پر۔
یہ ٹائپ 2 ذیابیطس کو روکتا ہے جئی میں بیٹا بلوکن کا ایک اور فائدہ یہ ہے کہ یہ آپ کے غذا میں کاربوہائیڈریٹ کے ہاضمے اور جذب کو سست کر سکتا ہے۔ چھوٹی آنت یہ کھانے کے بعد آپ کے بلڈ شوگر کی سطح میں اضافے اور کریشوں کو روکنے میں مدد کرتی ہے جو انسولین کے خلاف مزاحمت اور ذیابیطس کا باعث بنتی ہے وقت کے ساتھ بیٹا بلوکن انسولین کی رطوبت کو بھی بڑھا سکتا ہے جو کہ ہارمون ہے جو آپ کے بلڈ شوگر کو کنٹرول کرتا ہے یہ لوگوں کے لیے خاص طور پر اہم ہے۔ ٹائپ 2 ذیابیطس یا پری ذیابیطس کے ساتھ جنہوں نے انسولین کی حساسیت یا پیداوار کو نقصان پہنچایا ہے کچھ مطالعات سے پتہ چلتا ہے کہ جئی یا دلیا کھانے سے بلڈ شوگر کی سطح کم ہوسکتی ہے ۔

نمبر چار پر۔
یہ آپ کے کولیسٹرول کو کم کرتا ہے۔ جئی کے سب سے مشہور فوائد یہ ہے کہ وہ آپ کے کولیسٹرول کی سطح کو کم کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں خاص طور پر آپ کا برا کولیسٹرول LDL کولیسٹرول آپ کی شریانوں میں جمع ہو کر آپ کے دل کی بیماری اور فالج کا خطرہ بڑھا سکتا ہے جیسا کہ ہم نے کہا کہ جئی میں ایک قسم کا حل پذیر فائبر ہوتا ہے جسے بیٹا کہتے ہیں۔ -گلوکن جو آپ کے آنتوں میں جیل کی طرح کا مادہ بناتا ہے اور بائل ایسڈ سے منسلک ہوتا ہے بائل ایسڈ کولیسٹرول سے بنتا ہے اور چربی کو ہضم کرنے میں مدد کرتا ہے جب بیٹا گلوکن بائل ایسڈز سے منسلک ہوتا ہے تو یہ انہیں آپ کے خون میں جذب ہونے سے روکتا ہے جو آپ کے جگر کو زیادہ استعمال کرنے پر مجبور کرتا ہے۔

کولیسٹرول نئے بائل ایسڈز بناتا ہے جو آپ کے خون میں کولیسٹرول کی سطح کو کم کرتا ہے اور آپ کے دل کی بیماری کے خطرے کو کم کرتا ہے بہت سے مطالعات نے ثابت کیا ہے کہ جئی کھانے سے کل کولیسٹرول اور آپ کے ایل ڈی ایل کولیسٹرول کی سطح کو نمایاں طور پر کم کیا جا سکتا ہے محققین نے یہ بھی پایا کہ جئی کی بہترین خوراک لوسن کو کم کرنے کے لیے ہے۔ کولیسٹرول 3 گرام یومیہ تھا جو تقریباً 75 گرام خشک جئی کے برابر ہے یا ایک کپ اور آدھا پکا ہوا دلیا

نمبر پانچ پر۔
یہ آپ کے بلڈ پریشر کو کم کرتا ہے ہائی بلڈ پریشر دل کی بیماری فالج گردے کو نقصان پہنچانے اور بینائی کی کمی کا ایک بڑا خطرہ ہے۔ آپ کے بلڈ پریشر کو کئی میکانزم سے کم کرنے میں مدد کریں سب سے پہلے جئی میں ایوانانتھرومائڈز ہوتے ہیں جو نائٹرک آکسائیڈ کی پیداوار کو بڑھاتے ہیں اور آپ کی خون کی نالیوں کو پھیلاتے ہیں جو خون کے بہاؤ کو بہتر بنا سکتے ہیں اور آپ کے بلڈ پریشر کو کم کر سکتے ہیں جئی میں میگنیشیم پوٹاشیم اور کیلشیم بھی ہوتے ہیں جو کہ معدنیات ہیں جو کہ خون کے بہاؤ کو بہتر بنا سکتے ہیں۔

بلڈ پریشر کو منظم کرنے میں میگنیشیم آپ کی خون کی نالیوں کو آرام دیتا ہے اور خون کے بہاؤ کو بہتر بناتا ہے پوٹاشیم سوڈیم کے اثرات کو متوازن کرنے میں مدد کرتا ہے جو آپ کے بلڈ پریشر کو بڑھا سکتا ہے اور کیلشیم آپ کے خون کی شریانوں اور پٹھوں کو سکڑنے اور آرام کرنے میں مدد کرتا ہے پانچ تحقیقی آزمائشوں کے جائزے کے مطابق تقریباً 60 گرام کھانے سے رولڈ اوٹس یا 25 گرام جئی کی چوکر فی دن درحقیقت آپ کے سسٹولک اور ڈائیسٹولک بلڈ پریشر کو کم کر سکتی ہے۔

نمبر چھ پر۔
یہ آپ کے مدافعتی نظام کو بڑھاتا ہے جئی میں بائٹڈ لوکان خون کے سفید خلیوں کی سرگرمی کو بڑھانے میں مدد کر سکتا ہے جسے نیوٹروفیل کہتے ہیں جو پیتھوجینز کو مارنے اور صاف کرنے کے لیے ذمہ دار ہیں۔ جسمانی جئی میں سیلینیم اور زنک بھی ہوتے ہیں جو مدافعتی نظام کو سہارا دینے کے لیے دو اہم معدنیات ہیں سیلینیم سوزش کو کنٹرول کرنے اور آکسیڈیٹیو تناؤ کو روکنے میں مدد کرتا ہے جبکہ زنک اینٹی باڈیز پیدا کرنے اور انفیکشن سے لڑنے میں مدد کرتا ہے ایک کپ پکا ہوا دلیا سیلینیم کی روزانہ کی قیمت کا تقریباً 14 فیصد فراہم کرتا ہے۔

نمبر سات پر۔
جئی آپ کی آنتوں میں موجود اچھے بیکٹیریا کو کھلا کر آپ کے آنتوں کی صحت کو بھی فائدہ پہنچا سکتا ہے بیٹا گلوکن اور جئی ایک قسم کا پری بائیوٹک فائبر ہے جس کا مطلب ہے کہ یہ فائدہ مند جرثوموں کی نشوونما اور سرگرمی کو متحرک کر سکتا ہے۔ آپ کے آنتوں میں یہ جرثومے شارٹ چین فیٹی ایسڈ پیدا کر سکتے ہیں جس میں سوزش کے اثرات ہوتے ہیں اور آپ کے گٹ بیریئر کے کام کو بہتر بنا سکتے ہیں ایک صحت مند گٹ بیریئر آپ کے خون میں زہریلے مادوں اور بیکٹیریا کے اخراج کو روک سکتا ہے جو سوزش اور بیماری کا سبب بن سکتا ہے۔

نمبر آٹھ پر۔
جئی میں بہت سے اینٹی آکسیڈنٹس ہوتے ہیں جو آپ کے خلیات کو فری ریڈیکلز کی وجہ سے ہونے والے نقصان سے بچا سکتے ہیں فری ریڈیکلز غیر مستحکم مالیکیولز ہیں جو سوزش کی عمر بڑھنے اور دائمی بیماریوں کا سبب بن سکتے ہیں جئی میں موجود سب سے منفرد اینٹی آکسیڈنٹس میں سے ایک ایونانتھامائٹس کہلاتا ہے جو صرف جئی میں پایا جاتا ہے یہاں تک کہ اینتھرومائیڈز بھی۔
نائٹرک آکسائیڈ کی پیداوار کو بڑھا کر بلڈ پریشر کو کم کرتے ہوئے دکھایا گیا جو کہ ایک گیس کا مالیکیول ہے جو آپ کے خون کی نالیوں کو پھیلاتا ہے اور خون کے بہاؤ کو بہتر بناتا ہے یہاں تک کہ اینتھرومائڈز میں بھی سوزش اور خارش کے خلاف اثرات ہوتے ہیں جو کہ جلد کی حالتوں جیسے ایگزیما کےلیے فائدہ مند ہو سکتے ہیں ۔

نمبر نو پر۔
یہ بچپن میں دمہ کے خطرے کو کم کرتا ہے دمہ ایک دائمی حالت ہے جو ایئر ویز کو متاثر کرتی ہے اور گھرگھراہٹ کھانسی سانس لینے میں دشواری اور سینے میں جکڑن کا سبب بنتی ہے یہ بالغوں کے مقابلے بچوں میں زیادہ عام ہے اور ان کے معیار زندگی اور اسکول کی کارکردگی کو ایک طرح سے متاثر کر سکتا ہے۔ بچوں میں دمہ کی روک تھام یا اس کی شدت کو کم کرنے کے لیے کم عمری میں فائبر اور اینٹی آکسیڈنٹس سے بھرپور ٹھوس غذائیں متعارف کرانا ہے جئی ایسی غذا ہے جو پھیپھڑوں میں الرجی اور سوزش کو روکنے میں مددگار ثابت ہوتی ہے ۔

ایک تحقیق میں 15 سال کے 3000 سے زائد بچوں کو شامل کیا گیا۔ ممالک نے پایا کہ جن لوگوں نے اپنی پہلی غذا کے طور پر جئی کھائی ان میں پانچ سال کی عمر میں دمہ کا خطرہ 50 فیصد کم تھا ان لوگوں کے مقابلے جنہوں نے فن لینڈ کے ایک ہزار سے زیادہ بچوں پر مشتمل ایک اور تحقیق میں یہ دیکھا کہ جو لوگ چھ ماہ کی عمر سے پہلے باقاعدگی سے جئی کھاتے تھے۔ پانچ سال کی عمر میں دمہ کا خطرہ 61 فیصد کم ان لوگوں کے مقابلے میں جو جئی کم کھاتے ہیں ۔

نمبر دس پر۔
یہ بڑی آنت کے کینسر کو روک سکتا ہے بڑی آنت کا کینسر دنیا بھر میں کینسر کی سب سے عام قسموں میں سے ایک ہے یہ اس وقت ہوتا ہے جب استر میں غیر معمولی خلیات بڑھتے ہیں۔ ایک بڑی آنت یا ملاشی کی ایک بڑی تحقیق کے مطابق جس میں 10 یورپی ممالک کے نصف ملین سے زیادہ لوگ روزانہ 10 گرام سے زیادہ فائبر کھاتے ہیں جئی جیسے اناج سے بڑی آنت کے کینسر کا خطرہ 10 فیصد کم ہوتا ہے ۔

لہذا آپ جئی کو دیکھ سکتے ہیں۔ یہ ایک سپر فوڈ ہیں جو آپ کی صحت کو کئی طریقوں سے فائدہ پہنچا سکتے ہیں تاہم یہ نہ صرف فائدہ مند ہیں بلکہ یہ ورسٹائل کو تیار کرنے میں آسان بھی ہیں آپ انہیں کریمی ناشتے میں ،پانی یا دودھ میں پکا کر آپ انہیں دہی میں ،رات بھر بھگو کر بھی رکھ سکتے ہیں۔ تو آپ ان فوائد کے بارے میں کیا سوچتے ہیں؟ ۔۔۔شکریہ

Spread the love
کیٹاگری میں : صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں