بلڈ پریشر سے چھٹکار ا پا ئیں ہمیشہ کے لیے۔

اگر آپ یہ غذائیں کھاتے ہیں جو بلڈ پریشر کو کم کرتے ہیں تو آپ کو کبھی بھی ہائی بلڈ پریشر نہیں ہوگا۔ تاہم اچھی خبر یہ ہے کہ صحت مند طرز زندگی کو اپنانے اور سمارٹ غذائی انتخاب کرنے سے بلڈ پریشر کی سطح کو مؤثر طریقے سے کنٹرول کرنے میں مدد مل سکتی ہے ا ہم مزیدار اور غذائیت سے بھرپور غذائیں دریافت کریں گے جو سائنسی طور پر بلڈ پریشر کو کم کرنے اور دل کی مجموعی صحت کو فروغ دینے کے لیے ثابت ہوئے ہیں

ایک پتوں والا ساگ۔

پتوں والی سبزیاں جیسے پالک کائل اور کولارڈ گرینز ضروری وٹامنز اور معدنیات سے بھرے غذائیت سے بھرپور سبزیاں ہیں یہ متحرک سبزیاں خاص طور پر صحت مند بلڈ پریشر کی سطح کو برقرار رکھنے کے لیے فائدہ مند ہیں کیونکہ ان میں بھرپور پوٹاشیم اور میگنیشیم مواد پوٹاشیم سوڈیم کی سطح کو متوازن رکھنے میں مدد کرتا ہے جبکہ میگنیشیم خون کی شریانوں پر دباؤ کو کم کرتا ہے۔ خون کی نالیوں میں نرمی کو فروغ دیتا ہے پتوں والی سبزیاں آپ کی غذا میں سلاد کی ہمواری یا پکی ہوئی ڈشز کے ذریعے شامل کرنے سے نہ صرف بلڈ پریشر کو کنٹرول کرنے میں مدد ملتی ہے بلکہ دل کی مجموعی صحت میں ان کے بے شمار صحت کے فوائد اور استعداد کار کے حامل پتوں والی سبزیاں کسی بھی متوازن اور غذائیت سے بھرپور غذا میں ایک بہترین اضافہ ہیں ۔

دو بیریاں۔

بلیو بیریز اسٹرابیری اور رسبری جیسی بیریاں نہ صرف مزیدار ہیں بلکہ صحت کو بڑھانے والی خصوصیات سے بھی بھری ہوئی ہیں یہ رنگین پھل اینٹی آکسیڈنٹس جیسے اینتھوسیاننز سے بھرپور ہوتے ہیں جو سوزش کو کم کرنے اور دل کی مجموعی صحت کو سہارا دینے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔ خون کی شریانوں کے کام کو بہتر بنانے کی صلاحیت کی وجہ سے بلڈ پریشر مزید برآں بیریوں میں موجود فائبر کا زیادہ مقدار ہاضمے اور وزن کے انتظام میں مدد دیتا ہے جو کہ بلڈ پریشر کو بہتر طور پر کنٹرول کرنے میں معاون ہے چاہے اس کو اسموتھیز میں ناشتے کے طور پر استعمال کیا جائے یا مختلف پکوانوں میں شامل کیا جائے بیریوں کا ایک میٹھا اور غذائیت بخش طریقہ ہے۔ صحت مند قلبی نظام کو فروغ دیتے ہیں ۔

تین چقندر۔

چقندر متحرک اور غذائیت سے بھرپور جڑ والی سبزیاں صحت کے فوائد کی ایک صف پیش کرتی ہیں جس میں نائٹریٹ سے بھرے چقندر خون کی نالیوں کو چوڑا کرنے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں جس سے خون کے بہاؤ کو بہتر بنانے اور ہائی بلڈ پریشر کے خطرے کو کم کرنے میں ان کی صلاحیت بھی شامل ہے۔ اس نے ثابت کیا ہے کہ چقندر کا جوس پینے سے بلڈ پریشر کی سطح میں مختصر مدت میں نمایاں کمی واقع ہو سکتی ہے ان ورسٹائل انڈوں کو بھنے ہوئے سمجھے یا اسموتھیز میں ملا کر بھی کھایا جا سکتا ہے جس سے دل کی صحت مند غذا میں چقندر کو آپ کے کھانے میں شامل کرنا آسان اور مزیدار ہے۔ دل کی بہتر صحت اور مجموعی طور پر تندرستی میں حصہ ڈال سکتے ہیں ۔

چار جئی۔

جئی ایک صحت بخش اور پرورش بخش اناج بہت سے صحت کے فوائد پیش کرتا ہے خاص طور پر کم بلڈ پریشر کو فروغ دینے میں ان میں گھلنشیل فائبر کا اعلیٰ مواد کولیسٹرول کی سطح کو کم کرنے میں اہم کردار ادا کرتا ہے جو دل کی صحت اور خون میں مدد کرتا ہے۔ گھلنشیل ریشہ نظام انہضام میں ایک جیل جیسا مادہ بناتا ہے جو جسم سے کولیسٹرول کو خارج کرنے میں مدد کرتا ہے اور شریانوں میں پلاک بننے سے روکتا ہے جئی کا باقاعدگی سے استعمال خواہ دلیا گرینولا ہو یا رات بھر جئی دل کی صحت کو بہتر بنانے اور ہائی بلڈ پریشر کے خطرے کو کم کرنے میں مدد دے سکتی ہے۔

پانچ فیٹی فش۔

فیٹی فش جیسے سالمن میکریل اور سارڈائنز دل کی صحت مند غذا میں ایک قیمتی اضافہ ہیں کیونکہ ان میں اومیگا تھری فیٹی ایسڈز کی کثرت ہوتی ہے۔ قلبی صحت پر ان کے مثبت اثرات کے بارے میں بڑے پیمانے پر مطالعہ کیا گیا ہے جس میں بلڈ پریشر کو کم کرنے کی ان کی صلاحیت بھی شامل ہے اومیگا تھری سوجن کو کم کرنے میں مدد کرتی ہیں خون کے جمنے کو روکنے اور خون کی شریانوں کی لچک کو فروغ دینے میں یہ سب کچھ بلڈ پریشر کے ضابطے کو بہتر بنانے میں معاون ہیں باقاعدگی سے چربی والی مچھلی کو اپنے کھانے میں شامل کرنا چاہے گرل کیا گیا ہو۔ بیکڈ یا مچھلی کے تیل کے سپلیمنٹس دل کی مجموعی صحت کو سہارا دے سکتے ہیں اور ہائی بلڈ پریشر اور متعلقہ پیچیدگیوں کے خطرے کو نمایاں طور پر کم کرسکتے ہیں ۔

چھ لہسن۔

لہسن میں موجود فعال مرکب ایلیسن کو خون کی نالیوں میں نرمی اور پھیلاؤ کو فروغ دے کر قلبی صحت کی بہتری سے جوڑا گیا ہے جس کے نتیجے میں ہائی بلڈ پریشر میں کمی کا باعث بننے والے مطالعات سے پتہ چلتا ہے کہ لہسن کا باقاعدگی سے استعمال بلڈ پریشر کی سطح کو کم کرنے اور کولیسٹرول پروفائلز کو بہتر بنانے میں معاون ثابت ہو سکتا ہے۔

لہسن کو مختلف پکوانوں میں شامل کرکے یا اسے کچا کھا کر اپنی غذا میں شامل کرنا دل کی صحت کو سہارا دینے اور بلڈ پریشر کو کنٹرول کرنے کا ایک ذائقہ دار اور قدرتی طریقہ ہوسکتا ہے۔ پوٹاشیم سے بھرپور آلو بلڈ پریشر کو کنٹرول کرنے میں مدد کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے سیال توازن کو منظم کرنے اور صحت مند بلڈ پریشر کی سطح کو برقرار رکھنے میں پوٹاشیم سوڈیم کے ساتھ مل کر کام کرتا ہے بلڈ پریشر کو کنٹرول میں رکھنے کے لیے ہائی بلڈ پریشر کو روکنے کے لیے بیکڈ یا ابلے ہوئے آلوؤں کا انتخاب کرتے ہیں اور جلد کو برقرار رکھنے کو یقینی بناتے ہیں۔

سات ڈارک چاکلیٹ۔

ڈارک چاکلیٹ اس کے زوال پذیر ذائقہ اور مخملی ساخت حیرت انگیز طور پر دل کی صحت مند غذا کا حصہ بن سکتی ہے جس میں فلیوونائڈز سے بھرپور ہے یہ مختلف قلبی فوائد پیش کرتا ہے جس میں بلڈ پریشر کو کم کرنے کی صلاحیت بھی شامل ہے فلیوونائڈز خون کی نالیوں کے پھیلاؤ کو فروغ دیتے ہیں خون کے بہاؤ کو بہتر بناتے ہیں اور ہائی بلڈ پریشر کے خطرے کو کم کرتے ہیں تاہم اعتدال کلیدی اہمیت کا حامل ہے کیونکہ ڈارک چاکلیٹ کیلوری کی کثافت ہے اعلیٰ کوکو مواد والی اقسام کے لیے 70 کی دہائی زیادہ کوکو مواد والی اقسام کا انتخاب کریں 70 یا اس سے زیادہ اور کم سے کم شامل شکر کبھی کبھار تھوڑی سی سرونگ سے لطف اندوز ہوتے ہوئے بھرپور ذائقہ کا مزہ لیتے ہیں جبکہ ڈارک چاکلیٹ میں شامل دل کی حفاظتی خصوصیات کو کاٹتے ہوئے ڈارک چاکلیٹ کو ذمہ داری کے ساتھ شامل کیا جا سکتا ہے۔

Spread the love

اپنا تبصرہ بھیجیں